غریب سندھی اور غریب مہاجر میں کوئ فرق نہیں۔ ۔ ۔ بھٹو الطاف حسین تجزیہ

غریب سندھی اور غریب مہاجر میں کوئ فرق نہیں۔ ۔ ۔ بھٹو الطاف حسین تجزیہ

ھم بھٹو صاحب کے 100 سال پرانے ماضی میں نہیں جاتے صرف 50 پیچھے دیکھتے ھیں جب سے انہوں نے اپنی سیاست شروع کی۔بھٹو اندر سے سخت despot جابر/ڈکٹیٹر اور دکھاوے کا جمھور پسند تھا۔

دراصل بھٹو صاحب بڑے plutocratic(دولتمندوں کی حکومت) تھا۔
بھٹو اس فارمولے پرحکومت کرتے تھے چور کو کہا چوری کرو اور شاہکار کو کہا ھوشیار
ایک طرف انہوں نے ھاریوں کو کہا زمینوں پر قبضہ کر لو اور دوسری طرف وڈیروں کو کہا آئیں تو مارو سالوں(سوری) کو

مزدور کو کہا یہ فیکٹریاں تمہاری ھیں اور آجر کو کہا کھینچ کے رکھو۔

بھٹو صاحب کے قتل میں اس وقت کے وڈیرے ملوث ھیں۔

بھٹو نے سندھی قوم کو ایک سمت دی کہ وہ ٹنڈو آلہ یار سے ٹنڈو جام جاتے یہ کہما چھوڑ دیں کہ وہ پردیس جا رھے ھیں۔اور آج اسلام آباد سے لے کر پوری دنیا میں سندھی بھائ پھیلے ھوئےھیں۔

پھر بینظیر اپنے والد کی legacy کو لے کر بڑی خوبی سے چلیں لیکن بھٹو کے تینوں بیٹے نالائق تھے۔

اصل کام زرداری نے دکھایا جب نہوں نے کمال ھوشیاری سے بلاول کو بھٹو خاندان کا وارث بنا کر پیش کیا۔

سندھی قوم (عام سندھی سیدھا سادا محبتی بندہ ھے) ۔اسے پارٹیشن سے پہلے ھندو وءں اور بنیوں نے غلام بنائے رکھا اور اب وہ وڈیروں کے غلام ھیں۔

آج جب ھم سندھی قوم کی ترقی کی بات کرتے ھیں تو اصل اکثریتی سندھی قوم تو وہیں پارٹیشن سے پہلے کی جگہ کھڑی ھے۔ ۔ ۔ عدالتوں، تھانوں، ھسپتالوں، بازاروں، بس اڈوں، ریلوے اسٹیشنوں اور دیہاتوں میں جاکر دیکھ لیں اکثریتی سندھی کی حالت کیا ھے
ترقی سندھی وڈیروں اور سندھی بیورو کریسی نے کی۔

الطاف حسین نے مہاجر قوم کا سب سے بڑا نقصان جسے میں قتل کہونگا 3 مہاجر نسلوں کو تعلیم و تربیت سے دور رکھ کر کیا۔

ایک نسل میرے والدین کی تھی جو انڈیا/برما سے پڑھے لکھے اہل آئے اور پھر ایک نسل میری یعنی (شفیق خان) کی ھے جنہوں نے اپنے والدین کے نقش قدم پر چل کر اہلیت پیدا کی لیکن شفیق کی موجودہ نسل ( میں چند کی بات نہیں کر رھا جو انگلینڈ امریکی کینیڈا میں پلے بڑھے بالکہ عام مہاجر کی بات کر رھا ھوں) جو اس وقت 30 سے 40 سال کے پیٹے میں ھیں وہ کورے ھیں بالکل انگوٹھا چھاپ۔۔ خدا کی قسم بی اے ایل ایل بی پاس دس سال سے وکالت کرنے والا پیٹیشن ڈرافٹ نہیں کر سکتا۔ ( کوئ مجھ سے شرط لگا لے)آپ مارکٹ میں بھی جا کر دیکھ لیں

الطاف حسین کا مہاجر قوم کا یہ تعلیمی، اہلیت اور مستقبل کا نقصان دراصل 3 نسلوں کا قتل ھے۔
اس کے اثرات مہاجروں کو اگلے 50 سال بھگتنے پڑینگے۔

شفیق خان، کینیڈا
جولائی 15، 2021

Author: HYMS GROUP INTERNATIONAL

ex Chairman Edu Board, Reg Dir Sindh Ombudsman, Bank Exec; B.A(Hons) M.A English, M.A Int Rel, LL.B, 3 acreds from Canada

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: