ایک خوبصورت واقع پیسوں کے لئے کسطرح اصول ذبح کئے جاتے ھیں

ایک خوبصورت واقعہ:

*برطانیہ کے سابق وزیر اعظم ونسٹن چرچل نے ایک بار کہا تھا: “میں ایک دن انٹرویو کے لیے بی بی سی کے دفتر میں ٹیکسی لے کر گیا۔

*جب میں پہنچا تو میں نے ڈرائیور سے کہا کہ وہ میرے لیے چالیس منٹ انتظار کرے جب تک میں واپس نہ آؤں ، لیکن ڈرائیور نے معذرت کی اور کہا ، “میں نہیں کر سکتا ، کیونکہ مجھے ونسٹن چرچل کی تقریر سننے کے لیے گھر جانا ہے”۔ *

*میں اس شخص کی میری تقریر سننے کی خواہش سے حیران اور خوش ہوا! چنانچہ میں نے 20 پاؤنڈ نکالے اور 5 پاؤنڈ کے بجائے ٹیکسی ڈرائیور کو دے دیے بغیر اسے بتایا کہ میں کون ہوں۔ جب ڈرائیور نے پیسے اکٹھے کیے تو اس نے کہا: “میں گھنٹوں انتظار کروں گا جب تک آپ واپس نہ آ جائیں جناب! اور چرچل کو جہنم میں جانے دو”۔

*آپ دیکھ سکتے ہیں کہ پیسوں کے حق میں اصولوں میں کس طرح تبدیلی کی گئی ہے۔ قومیں پیسے کے عوض بیچی گئیں۔ عزت پیسے کے عوض بیچی گئی خاندان پیسوں کے لیے تقسیم ہوئے۔ دوست پیسے کے لیے الگ ہوئے پیسے کے لیے لوگ مارے گئے اور لوگوں کو پیسوں کے لیے غلام بنایا جا رہا ہے۔
۔

Author: HYMS GROUP INTERNATIONAL

ex Chairman Edu Board, Reg Dir Sindh Ombudsman, Bank Exec; B.A(Hons) M.A English, M.A Int Rel, LL.B, 3 acreds from Canada

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: