میرپورخاص تعلیمی بورڈ کے 113 ملازمین (جنہیں غیر قانونی قرار دیا گیا) کے تعلق سے مزید حقائق۔ ۔ (جاری ھے)

میرپورخاص تعلیمی بورڈ کے 113 ملازمین (جنہیں غیر قانونی قرار دیا گیا) کے تعلق سے مزید حقائق۔ ۔ (جاری ھے)

میرپورخاص تعلیمی بورڈ میں میں 2011 سے 2014 تک تین سال چئیرمین رھا جو کہ میری زندگی کی واحد گورنمنٹ ملازمت تھی اور وہ بھی سیمی گورنمنٹ

سندھ بورڈز میں تنخواہ، مراعات اور دیگر سہولیات گورنمنٹ آف سندھ کے ملازمین سے مختلف ھیں اور نہ ھی سندھ گورنمنٹ کے قائیدہ قانوں تعلیمی بورڈز پر لاگو ھوتے ھیں

ستمبر 2016 میں نیب نے میرے سمیت مزید کچھ بورڈز کے ملازمین؛ (سابقہ اور موجودہ) اور دیگر شہر سے لئے گئے کمیٹی ممبرز کے خلاف ریفرنس فائل کیا۔
ساڑھے چار سال کے ٹرائل کے بعد 15 فروری 2021 کو فیصلہ آیا۔

میں آگے چل کر مزید اقساط میں ایک ایک بات کی وضاحت کرونگا جو کہ عوام
بالخصوص میرپورخاص اور ملحقہ ریجن کیلئے انہیں سمجھنا ضروری ھے اور لوگوں کی آنکھیں کھل جائینگی

آج کی پوسٹ میں میں صرف یہ چیلنج کے ساتھ بتانا چاھتا ھوں اس ریفرنس کے تعلق سے جتنی معلومات، دستاویزی ثبوت اور مواد میرے پاس یہاں کینیڈا میں ھے وہ بورڈ کے موجودہ چئیرمین، سکرٹری، کنٹرولر، یا کسی اور افسر کے پاس میرپورخاص بورڈ میں آج بھی نہیں، یہاں تک کے نیب کا وہ جج جس نے فیصلہ سنایا اور وہ آئ او سرور احمد کے پاس بھی نہیں ھوگا

خاص کر میرپورخاص تعلیمی بورڈ کے افسران، اسٹاف اور با لخصوص وہ 113 ملازمین میری پوسٹوں کو غور سے نہ صرف پڑھیں بالکہ سنبھال کر رکھیں

مجھے معلوم ھے نیب جج، آئ او، سکرٹری، اور چئیرمین چاہتے ھوئے بھی ان 113 لوگوں کو ملازمت سے برطرف نہیں کر سکے (جو کہ میرے لئے ایک لیٹر کی مار تھی اور ھے) اور وہ بدستور 2005 سے لے کر آج ستمبر 2021 تک اپنے عہدوں پر کام کر رھے ھیں

یہ بات میں نے اس لئے کہی کہ مجھے افسوس ھوتا ھے جب میں یہ سنتا ھوں کہ 113 کے 113 ملازمین بھیگی بلی بن کر ملازمت کر رھے ھیں اور ھر ایک نے ایک ایک افسر کے گوڈے پکڑے ھوئ ھیں دبانے کے لئے۔

“113 لوگوں کی یہ بزدلی، مصلحت پرستی، ڈروخوف اورخودغرض اس جذبہ کے سراسر خلاف ھے جس کے تحت ان 113 لوگوں کو ملازمتیں ملیں”

مجھے معلوم ھے یہ 113 لوگ ایورج سے بھی کم درجہ کے لوگ ھیں۔سمجھ بوجھ کے علاوہ ان کے پاس نہ ھی پیسہ ھے اور نہ رسورسز (کیا ضمیر بھی نہیں) کہ وہ کسی ناگہانی حالت کا مقابلہ کر سکیں یعنی ملازمت سے برطرفی
ملازمت تو تم کر لوگے لیکن رھوگے چوہے کے چوہے جس کا کوئ فائیدہ نہیں

جاری ھے

شفیق احمد خان کینیڈا
ستمبر 24، 2021

شفیق احمد خان

Author: HYMS GROUP INTERNATIONAL

ex Chairman Edu Board, Reg Dir Sindh Ombudsman, Bank Exec; B.A(Hons) M.A English, M.A Int Rel, LL.B, 3 acreds from Canada

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: