اردو اور انگریزی کے مغربی میڈیا کیلئے

میں نے محسوس کیا ہے مغرب میں صحافی عالمی گھڑی کے برعکس چلتے ہیں۔
مجھے آپکا کوئی مضمون 10-15-20 صفحات سے کم نظر نہیں آتا۔
اس تیز رفتاربدنیا میں کس کے پاس آپ کا ‘ریسرچ پیپر’ پڑھنے کا وقت ہے؟

لوگ پی ایچ ڈی پاس کرنے کے لیے تھیسس نہیں خبریں چاہتے ہیں۔

آپ اپنا وقت، اپنا پرنٹ اور قارئین کا قیمتی وقت بچانے کے لیے اپنے مضامین کو 2-3 صفحات میں مختصر کیوں نہیں کرتے؟
لگتا ہے، آپ خبریں نہیں پہنچاتے بلکہ اپنے قارئین کو متاثر کرنے کے لیے لکھتے ہیں اور اہلیت جھاڑتے ہیں۔
میں نے آج تک کبھی آپ کا کوئی مضمون مکمل نہیں پڑھا۔

شفیق خان، کینیڈا

Author: HYMS GROUP INTERNATIONAL

ex Chairman Edu Board, Reg Dir Sindh Ombudsman, Bank Exec; B.A(Hons) M.A English, M.A Int Rel, LL.B, 3 acreds from Canada

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: